کراچی : مظاہرے کے باعث صوبے بھر کے اسپتالوں میں مریضوں کو دی جانے والی صحت کی سہولیات متاثر ہوئیں اور اسپتالوں میں درجنوں آپریشن بھی ملتوی ہو گئے ۔مظاہرین نے بینرز اور پلے کارڈز اٹھا رکھے تھے جن پر ان کے مطالبات درج تھے ۔ اس موقع پر زبردست نعرے بازی بھی کی گئی ۔ سندھ نرسز الائنس کے رہنما اعجازعلی کلیری کے مطابق سیکریٹری صحت مذاکرات کے لئے آئے تھے جنہیں بتادیا تھا کہ فور ٹائر فارمولے اور ہیلتھ الاؤنس کی منظور شدہ سمری دکھا دی جائے تو احتجاج ختم کر دیا جائے گا جس پر سیکریٹری صحت نے یقین دہانی کرائی کہ سمری منظور کراکر لائیں گے لیکن اب رات کے دس بج چکے ہیں سمری نہیں لائی گئی اس لئے احتجاج جاری رکھنے کا فیصلہ کیا گیا ہے ۔