لاہور: سابق قومی کپتان شاہد آفریدی کا کہنا ہے کہ قومی ٹیم کی انتظامیہ کو جتنے بھی تجربات کرنے ہیں وہ انگلینڈ کیخلاف سیریز میں کرلے کیونکہ عالمی کپ میں حریفوں کا سامنا کرنے کیلئے ایک بہترین اسکواڈ درکار ہوگا۔ماضی قریب کے بہترین آل راؤنڈر کا کہنا تھا کہ ورلڈ کپ میں کپتان سرفراز احمد بیٹنگ آرڈر میں جتنا اوپر کھیلیں گے اس سے ٹیم کو فائدہ پہنچے گا کیونکہ وہ جارح مزاج اور مثبت انداز سے بیٹنگ کی اہلیت رکھتے ہیں اور انہیں دیکھ کر دوسرے کھلاڑیوں کو بھی حوصلہ ملے گا۔انہوں نے امید ظاہر کی کہ سرفراز احمد میگا ایونٹ میں گرین شرٹس کی بہترین انداز سے قیادت کریں گے اور اچھے نتائج سامنے آئیں گے۔سابق قومی کپتان کا کہنا تھا کہ پاکستانی ٹیم ٹیسٹ اور ٹی ٹوئنٹی کرکٹ میں اچھی کارکردگی کی مالک رہی ہے لیکن عالمی کپ جیسے بڑے ایونٹ میں انہیں ون ڈے میچوں میں بھی اپنی صلاحیت کا اظہار کرنا ہوگا کیونکہ اس فارمیٹ میں قومی ٹیم کو بہترین کارکردگی دکھانے میں مشکلات درپیش رہی ہیں۔ان کا کہنا تھا کہ پاکستان کو سیمی فائنل میں جگہ مل سکتی ہے لیکن پلیئرز کو ہر بار اس سنجیدہ سوچ کے ساتھ میدان سنبھالنا ہوگا کہ وہ اپنا آخری میچ کھیل رہے ہیں۔ شاہد آفریدی کا کہنا تھا کہ انہوں نے ہمیشہ فاسٹ بالرز وہاب ریاض اور محمد عامر کی حمایت کی ہے جن کو ورلڈ کپ کیلئے ٹیم میں ہونا چاہئے تھا اور ٹیم انتظامیہ کے علاوہ سلیکٹرز کو اس پہلو پر بھی توجہ دینا چاہئے۔ وہاب ریاض اور محمد عامر کی ہمیشہ حمایت کی جن کو ٹیم میں ہونا چاہئے ،سابق کپتان