اسلام آباد؍ لندن: مسلم لیگ(ن) کے صدر، قومی اسمبلی میں اپوزیشن لیڈرشہباز شریف نے وزیرستان واقعہ پراظہارافسوس کرتے ہوئے کہاہے کہ تمام حقائق پارلیمان کے سامنے آنے چاہیئں۔اپنی ٹویٹ میں شہباز شریف نے کہا واقعہ پرسیاست قومی جرم ہوگا،تمام محب وطن صورتحال دیکھتے ہوئے فوری اپناکرداراداکریں۔علاوہ ازیں مسلم لیگ(ن) کی نائب صدر مریم نواز نے کہاہے کہ ہر پاکستانی کی جان قیمتی اور اس کا خون مقدس ہے ،خون بہے تو حقائق قوم کے سامنے آنے چاہئیں،محبت، امن اور مفاہمت ہتھیاروں سے کہیں زیادہ طاقت ور ہیں، کیا ہم احتجاج کچلنے اور آوازیں دبانے کی بہت بھاری قیمت ادا نہیں کر چکے ؟اﷲ پاکستان پر رحم کرے ۔ایک اورٹویٹ میں مریم نوازنے کہا پاکستان اندرونی طور پر کشیدگی کا متحمل نہیں ہوسکتا ،دونوں طرف اگر پاکستان کے بیٹے ہیں تو سیاسی ،صحافتی حلقوں سمیت ریاست کے تمام اداروں کو ذمہ دارانہ کردار ادا کرنا ہوگا ورنہ ایک بار پھر پاکستان کو ناقابلِ تلافی نقصان پہنچ سکتا ہے ،اﷲ تعالی جاں بحق ہونے والوں کے لواحقین کو صبر جمیل عطا فرمائے اور تمام زخمیوں کو صحت کاملہ سے نوازے ۔پیپلزپارٹی کے چیئرمین بلاول بھٹو زرداری نے کہا ہے کہ میں نہیں سمجھتا کہ محسن داوڑ سکیورٹی چیک پوسٹ پر حملہ کرسکتے ہیں، اگر کہیں پر تشدد کا واقعہ ہوا ہے تو ہم اس کی مذمت کرتے ہیں لیکن احتجاج کرنا سیاسی لوگوں کا حق ہے ، ان پر بھی تشدد نہیں ہونا چاہئے ۔انہوں نے کہا ہم کسی کے نقطہ نظر سے اختلاف کرسکتے ہیں، اگر شمالی وزیرستان جیسے علاقے سے تعلق رکھنے والے نوجوان سیاستدانوں سے مکالمہ نہیں کریں گے ، ان کی ناراضگیوں کو کم کرنے کی کوشش نہیں کریں گے تو سب نے دیکھا کہ ایوب خان کے دور میں مشرقی پاکستان کے ساتھ کیا ہوا، پرویز مشرف کے دور میں بلوچستان میں کیا ہوا، اگر ہم اپنے حق، قانون کی حکمرانی اور جمہوریت کی بات کرنے والے سیاستدانوں کو غدار قرار دیں گے تو یہ راستہ خطرناک ہوگا۔جے یو آئی(ف) کے امیر مولانا فضل الرحمٰن نے کہا ہے کہ چیک پوسٹ واقعہ پر افسوس ہوا، جو جاں بحق ہوئے یا زخمی ہوئے ، ان کے ساتھ ہمدردی کا اظہار کرتے ہیں۔ فضل الرحمٰن نے کہا جمہوری دنیا میں لوگوں کو احتجاج کا حق حاصل ہے ،انھیں اس سے روکنا اشتعال اور شدت کو جنم دیتا ہے ۔ انہوں نے کہا حکومت لوگوں کے جان و مال کے تحفظ کی ذمہ دار ہے ، آج عام آدمی ریاست اور حکومت کے ہاتھوں خود کو غیر محفوظ تصور کرتاہے ۔ فضل الرحمٰن نے کہا حکومت اور ریاستی قوت آئین اور قانون سے بالاتر نہیں،عوام سے صبر و تحمل اور پرامن رہنے کی اپیل کرتے ہیں ۔