کراچی : مقامی کاٹن مارکیٹ میں گزشتہ ہفتے ٹیکسٹائل و سپنگ ملزکی خریداری میں اضافے کی وجہ سے روئی کی فی من قیمت 200 تا 300 روپے بڑھ گئی ہے ۔ بارشوں کے باعث روئی کی کوالٹی متاثر ہوئی تھی جس کی وجہ سے ٹیکسٹائل ملز نے محتاط رویہ اختیار کیا ہوا تھا لیکن جیسے جیسے روئی کا معیار ٹھیک ہونا شروع ہوا ملز کی خریداری میں بھی اضافہ ہوتا گیا، خریداری بڑھنے کی ایک وجہ 28تا 30اگست بارشوں کا نیا سلسلہ شروع ہونے کی پیش گوئی بھی ہے ۔ صوبہ سندھ میں گزشتہ کاروباری ہفتے کے آخری دنوں میں روئی میں فی من قیمت 300 روپے کا اضافہ ہوا، جس کی وجہ سے 40کلوگرام روئی کی قیمت 8000 روپے ہوگئی جبکہ 200تا 300روپے اضافے کے ساتھ فی من پھٹی 3400 تا 3800 روپے میں فروخت ہوئی، بنولہ اور کھل کے بھاؤ میں اسی نسبت سے اضافہ ہوا، صوبہ پنجاب میں روئی کی فی من قیمت 8300 تا 8400 روپے اور پھٹی کے 40کلو قیمت 3500 تا 4100 روپے ریکارڈ کی گئی، بلوچستان میں روئی کا بھاؤ فی من 7900 تا 8000 روپے رہا جبکہ پھٹی کے 40کلوگرام کی قیمت 40 کلو 3500 تا 3700 روپے رہی۔ کراچی کاٹن بروکرز فورم کیمطابق جیسے جیسے روئی کی کوالٹی اچھی ہوتی جائے گی ملز کی خریداری بڑھتی جائے گی۔