اسلام آباد: کرتارپور راہداری مذاکرات کا تیسرا دور کل ہوگا، بھارتی مطالبات کی مکمل فہرست سامنے آ گئی، پاکستان نے 1 دن میں 5 ہزار سکھ یاتریوں کی آمد کا مطالبہ تسلیم کرلیا۔سفارتی ذرائع کے مطابق پاکستان نے سکھ یاتریوں کیلئے ویزہ فری انٹری اور یاتریوں کو گروپس یا انفرادی طور پر پیدل کرتارپور آنے کی اجازت دینے کا مطالبہ بھی مان لیا۔ اس کے علاوہ بھارت نے خصوصی مواقع پر 10 ہزار یاتری، دیگر عقائد کے لوگوں کو بھی کرتارپور آنے کی اجازت دینے کا مطالبہ کیا ہے۔بھارت نے سکھ یاتریوں کو کرتارپور میں لنگر، پرساد تیاری و تقسیم کی اجازت دینے کا بھی کہا ہے۔ سفارتی ذرائع کے مطابق پاکستان نے راہداری کھولنے کے لئے 95 فیصد سے زائد کام مکمل کر لیا۔