کراچی(بی بی سی)  گلشن اقبال میں جلسہ گاہ کے تنازع پر پیپلز پارٹی اور تحریک انصاف کے کارکنوں میں تصادم ہوا ہے جس کے دوران دونوں جانب سے پتھراؤ سمیت ہوائی فائرنگ بھی کی گئی نتیجے میں متعدد کارکنان زخمی ہوگئے۔ گلشن اقبال میں بیت المکرم مسجد کے قریب واقع حکیم محمد سعید گراؤنڈ میں 12 مئی کو جلسہ کرنے کے لیے کیمپ لگانے کے معاملے پر پیپلز پارٹی اور تحریک انصاف کے کارکنوں کے درمیان تصادم ہوا۔ تصادم کے درمیان دونوں جانب سے پتھراؤ ہوا، ڈنڈوں کا آزادانہ استعمال کیا گیا جب کہ ہوائی فائرنگ بھی ہوئی۔ شرپسندوں نے پارکنگ میں کھڑی موٹر سائیکلیں نذر آتش کردیں اور دو گاڑیوں کو بھی آگ لگادی، کھڑی گاڑیوں کے شیشے توڑے اور انہیں نقصان پہنچایا۔ جھگڑا کئی گھنٹے جاری رہا۔ جھگڑا شروع ہوتے ہی سب سے پہلے یہاں سے پولیس غائب ہوگئی اگر پولیس کوشش کرتی تو جھگڑا نہ بڑھتا، بعد میں بھی صرف چند اہلکار ہی نظر آئے یا جو پولیس اہلکار آئے وہ زیادہ تر وقت ایک طرف کھڑے تماشا دیکھتے رہے۔ تصادم کے بعد اطراف میں ٹریفک کی روانی معطل ہوگئی اور دکانیں بند کردی گئیں۔جھگڑے کے دوران بار بار دونوں طرف سے کارکنان گتھم گتھا ہوتے رہے، ایک دوسرے پر پتھر پھینکتے رہے اور ڈنڈوں سے حملے کرتے رہے۔ پولیس کی جانب سے شرپسندوں پر قابو پانے کے لیے واٹر کینن بھی منگایا گیا لیکن اس کا استعمال نہیں کیا جاسکا۔ جھگڑا مزید بڑھا تو شرپسندوں نے پی ٹی آئی کے کیمپ کو آگ لگادی، پولیس نے دونوں جماعتوں کو منتشر کرنے کے لیے ہوائی فائرنگ بھی کی۔