لاہور : پاک فضائیہ نے لائن آف کنٹرول کی خلاف ورزی کرنے پر بھارت کے دو طیارے مار گرائے تھے جس میں سے ایک کا ملبہ پاکستان میں گرا جبکہ دوسر امقبوضہ کشمیر میں گر ا تاہم ایک بھارتی پائلٹ ابھی نندن بھی گرفتار ہوا جسے پاکستان نے جذبہ خیر سگالی اور امن کے قیام کے اقدام کے طور پر رہا کر دیا ۔ ابھی نندن کے ساتھ سیکیورٹی فورسز نے انتہائی اچھا سلوک کیا جس کی بین الاقوامی دنیا بھی معترف ہے اور وزیراعظم عمران خان کے بھارتی پائلٹ کو فوری رہا کرنے کے اعلان کو بھی بین الاقوامی سطح پر بے حد سراہا گیا تاہم ابھی انکشاف ہواہے کہ واپس جانے سے قبل بھارتی پائلٹ نے پاکستانی سیکیورٹی فورسز سے ایک خواہش کابھی اظہار کیا گیا ۔ سینئر صحافی صابر شاکر نے نجی ٹی وی اے آروائے نیوز کے پروگرام میں گفتگو کرتے ہوئے بتایا کہ ابھی نندن نے جاتے جاتے ایک خواہش کا اظہار کیا کہ میرا پسٹل اور وردی واپس کر دی جائے لیکن ہم نے وہ واپس نہیں اور کہا کہ یہ ہمارے ریکارڈ کا حصہ رہے گی، وردی اور ان کے پسٹل کو میوزیم میں رکھا جائے گا ، پسٹل سے انہوں نے دو فائر بھی کیے تھے ۔